سترفرکہت

اگر آپ کسی تفتیش میں مشتبہ ہیں یاسمن موصول ہوچکے ہیں یا زیر تفتیش ہیں یا مقدمہ زیر التوا ہے یا آپ گرفتار ہونے کےمراحل میں ہیں یا گرفتار ہوچکے ہیں تو آپ کو فوری طور پر کسی فوجداری وکیل کی ضرورت ہے۔

سترفرکہت

فوجداری قانون میں ، میں عام طور پر اپنے مؤکلوں (کلائینٹس) کے لئے مندرجہ ذیل طریقه کار میں کام کرتا ہوں :

  • پولیس یا سرکاری وکیل کے ذریعہ پوچھ گچھ\سوال جواب\تفتیش میں رہنمائی کرنا
  • تلاش / ضبطی / گرفتاری کے وارنٹ کی صورت میں رہنمائی کرنا
  • مجرمانہ حکم یا فرد جرم کی عائیدگی کی صورت میں رہنمائی کرنا
  • ثانوی کارروائی / نجی کارروائی کی صورت میں رہنمائی کرنا
  • اپیل کرنا
  • فوجداری شکایت درج کروانے میں نمائندگی کرنا

اگر آپ کسی تفتیش میں مشتبہ ہیں یاسمن موصول ہوچکے ہیں یا زیر تفتیش ہیں یا مقدمہ زیر التوا ہے یا آپ گرفتار ہونے کےمراحل میں ہیں یا گرفتار ہوچکے ہیں تو آپ کو فوری طور پر کسی فوجداری وکیل کی ضرورت ہے۔

فوجداری کاروائیوں میں آپ کو بہت سے حکومتی اقدامات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جو آپ کے حقوق میں مداخلت کرسکتے ہیں ، کبھی کبھی تجربه کار نتائج کے ساتھ۔

زبیر خان ایڈووکیٹ فوجداری مقدمات کی صورت میں آپ کے حقوق کو اچھی طرح جانتے ہیں اور وہ آپ کے لئے ان حقوق کا نفاذ عمل بھی کروا سکتے ہیں ۔ آپ کی ذاتی صورتحال اور ملزم کے جرم کے مطابق وکیل صاحب کے پاس انتہائی موثر دفاعی طریقہ کار ہیں اور وہ آپ کے لئے انکا نفاذ کرواسکتےہیں۔

ہنگامی صورتحال میں آپ کو فوری طور پر موثر فوجداری دفاع ملے گا، اس صورت میں آپ دفتر کے اوقات کے بعد بھی ہم سے رابطہ کرسکتے ہیں۔ برائے مہربانی جواب دینے والی مشین (وائیس میل ) پراپنا پیغام چھوڑیں پراپنا پیغام چھوڑیں آپکو کچھ ہی لمحوں میں جواب دیا جائے گا

اس سے قطع نظر کہ آپ ہمیں اپنے دفاع کے لیے دفاعی وکیل مقرر کریں یا کسی اور وکیل کو مقرر کریں ، مندرجہ ذیل اصولوں کا مشاہدہ کرنا ضروری ہے۔

کچھ نہ کہیں! کسی بھی چیز پر دستخط نہ کریں! کچھ بھی تسلیم نہ کریں!

آپ کو کاروائی میں حق حاصل ہے کہ آپ کسی بھی وقت کسی بھی حالت میں خامو شی اختیار کر سکتے ہیں اس حق کو استعمال کرنے سے آپ کوکوئی نقصان نہیں ہوگا کچھ نہ کہیں! کسی بھی چیز پر دستخط نہ کریں! کچھ بھی تسلیم نہ کریں! مختلف طریقے سے کام کرنے پر راضی نہ ہوں اگر آپ ایسا کرتے ہیں تو آپ سزاوں کو کم کرنے یا ریلیز کے لئے جھوٹے یا فریبی ہوجائیں گے۔ صرف اپنی ذاتی تفصیلات کو درج کریں جہاں تک کہ آپ خود پر بوجھ نہیں سمجھتے ۔ ذاتی اعداد و شمار کو درج نہ کرنا انتظامی جرم ہے نہ کہ مجرمانہ جرم. ایک قصور وار شخص کو 12 گھنٹے بعد رہا کر دیا جاتا ہے اگر ضرورت ہو تو اسکی شناخت کی تصدیق کے بعد۔

آپ کی کوئی ذمہ داری نہیں ہےکہ پوچھ گچھ کے لئے یا بطور گواہ پولیس کے سامنے پیش ہوں اس کا اطلاق فوری جبر کے خطرہ پر نہیں ہوتا ہے۔ اکثر پولیس کو دیے گے بیانات ، معلوماتی گذارشات اور جواز کے ذریعہ آپ اپنے آپ خلاف قانونی چارہ جوئی اور اسکی سزا ہونے کا مرتکب کراتے ہیں۔

اچھے فوجداری وکیل کا انتخاب آپ کی آزادی ، بریت ، کارروائی کا احتتام ، یا ہلکی سزا کے لئے اہم ہوتاہے۔

اگر آپ جرمن زبان کے ماہر نہیں تو ہم آپ کو درج ذیل زبانوں میں مشورہ دے سکتے ہیں: انگریزی ، اردو ، ہندی ، پنجابی۔

اس طرح کے معاملات میں ہم لازمی دفاع کے لئے بھی درخواست دے سکتے ہیں تاکہ آپ کو ہمارے کمیشن کی قیمت ادا کرنے کی ضرورت نہ پڑے.

انتظامی جرائم اور جرمانے افراد یا کمپنیوں کو متاثر کرسکتے ہیں۔

افراد عام طور پر ٹریفک کی خلاف ورزیوں سے متاثر ہوتے ہیں عموما «ریڈ لائٹ» کو نظرانداز کرنا، خاص طور پر تیز رفتار یا «چلتی گاڑی پر موبائیل فون کا استعمال» کے بعد متعلقہ شخص ابتدائی طور پر سماعت کی شیٹ وصول کرتا ہے جس سے کے بعد پھر اکثر جرمانے کا نوٹس مل جاتا ہے۔

ہم آپ کے لئے جرمانے کا نوٹس باغور چیک کرتے ہیں کیونکہ بہت سارے جرمانے غلط ہوتے ہیں اس لیے جرمانے کے خلاف اپیل کرنا سمجھ میں آتا ہے۔ ابتدائی خلاف ورزیوں کی صورت میں جہاں تک ممکن ہو ڈرائیونگ پابندی کے وجودی نتائج سے بچیں۔ڈرائیونگ پابندی سے بچنا اکثر ممکن ہے۔